Balaghal Ula Be Kamalehi – Sabri Brothers Qawwal: Download MP3 Worlds Largest Collection of Qawwali, Arfana & Sufiana Kalam, Hamd & Naat

Balaghal Ula Be Kamalehi – Sabri Brothers Qawwal: Download MP3

Persian  ﻓﺎﺭﺴﻰ

 

Balaghul Ula Bi Kamalihi , Kashafaduja Bi Jamalihi is probably the greatest Naat ever written, penned by the greatest Sufi saint Hazrat Shaykh Saadi. It is said that Hazrat Amir Khusru had a dream in which he saw Shaykh Saadi presenting this Naat to Prophet Muhammad SAW, who accepted it with great pleasure. It is considered to bring great Barkah.

 

Sabri Brothers Qawwal

 

 Download (Right click + save target as, or save link as)

Based on below Naat verses by Hazrat Shaykh Saadi – شیخ سعدی شیرازی ,

Balaghul Ula Bi Kamalihi
Kashafaduja Bi Jamalihi
Hasunat Jameeu Khisalihii
Sallo Alaihi Wa Aalihi [SAW]

UrduTranslation of Balaghul Ula Bi Kamalihi

پہنچے بلندی پر اپنے کمال سے
دور کر دیا اندھیرا اپنے جمال سے
حسیں ہیں آپ کی سب خصلتیں
درود بھیچو آپؐ پر اور آپؐ کی آل پر

 

English Translation of Balaghul Ula Bi Kamalihi

He reached the highest place through his perfection
He drove out the darkness through his beauty
Beautified were all his characteristics
Our hearts and lives are occupied by thoughts of him

Full Lyrics of Sabri Brother Qawwali

سر ِ لامکاں سے طلب ہوئی

سوئے منتہیٰ وہ چلے نبی

کوئی حد ہے ان کے عروج کی

اے ختم ِ رُسُل ، کعبہ ٔ مقصود توئی

سہانی رات تھی اور پُر سکوں زمانہ تھ

ا اثر میں ڈوبا ہوا جذب ِ عاشقانہ تھ

ا اُنہیں تو عرش پہ محبوب کو بلانا تھا

طلب تھی دید کی معراج کا بہانہ تھ

ا سر ِ لامکاں سے طلب ہوئی

سوئے منتہیٰ وہ چلے نبی

* یہ کمال ِ حُسن کا معجزہ کہ فراق حق بھی نہ سہہ سک

ا سر ِ لامکاں سے طلب ہوئی سوئے منتہیٰ وہ چلے نبی

* شب ِ معراج لیا عرش ِ بریں پر بلوائے

صدمہ ِ ہجر خدا سے بھی گوارہ نہ ہوا

سر ِ لامکاں سے طلب ہوئی سوئے منتہیٰ وہ چلے نبی

* کوئی حد ہے اُن* کے عروج کی

بلغ العُلیٰ بکمالہ

سر ِ لامکاں سے طلب ہوئی

کوئی حد ہے اُن* کے عروج کی

خیر الوریٰ ، صدر الدقیٰ ، نجم الھدیٰ

، نور العلیٰ شمس الضحیٰ ، بدر الدُجیٰ

، یعنی محمد مصطفیٰ * کوئی حد ہے

اُن* کے عروج کی کوئی حد ہے اُن

صدر الدقیٰ ، نجم الھدیٰ

نور العلیٰ شمس الضحیٰ

بدر الدُجیٰ ، یعنی محمد مصطفیٰ

آقا*روا سالار ِ دیں

 ، یا رحمت اللعالمیں

آ مقتدیٰ ِ مُرسلیں

آ پیشوائے انبیاء

جنت نشان ِ قوّئے تو

والشمس ایماں روئے

تو واللیل وصف ِ لوئے تو

خوبی ِ رویت والضحیٰ

اسم ِ تو اسم ِ اعظمی

جسم ِ تو جان ِ عالمی

ذات ِ تو فخر آدمی

شان ِ تو شان ِ کبریا

کوئی حد ہے اُن* کے عروج کی

(پروفیسرسیّد مجیب ظفرانوارحمیدی)

 

 

 

Facebook Comments